Saturday, 22 November 2008

قومی ترانہ شاعر موسیقار منتخب ساز

0 comments

قومی ترانہہر ملک و قوم کا ایک قومی ترانہ ہوتا ہے جس سے اسکے ماضی حال اور مستقبل کے بارے میں وہاں کے باشندوں کے خیالات کا اندازہ ہوتا ہے۔

قومى ترانہ

پاک سرزمین شاد باد

كشور حسين شاد باد

تو نشان عزم عالي شان !

ارض پاکستان

مرکز یقین شاد باد

پاک سرزمین کا نظام

قوت اخوت عوام

قوم ، ملک ، سلطنت پائندہ تابندہ باد

شاد باد منزل مراد

پرچم ستارہ و ہلال

رہبر ترقی و کمال

ترجمان ماضی شان حال !

جان استقبال

سایۂ خدائے ذوالجلال

National Anthem English translation
Blessed be the Sacred Land Happy and bounteous realm Symbol of high resolve Land of Pakistan Blessed be thou, Citadel of Faith The Order of this Sacred Land Is the might of the Brotherhood of the People May the nation, the country, and the state Shine in glory everlasting Blessed be the goal of our ambition This Flag of the Crescent and Star Leads the way to progress and perfection Interpreter of our past, glory of our present Inspiration of our future Symbol of the Almighty's protection
شاعرقومی ترانہ
نامور شاعر ابو لاثر حفیظ جالندھری کا تحریر کردہ ہے جو جون 1954 میں منظور ہوا
۔موسیقار
قومی ترانہ کی دھن مشہور موسیقار احمد جی چھاگلہ نے مرتب کی تھی جسکا کل دورانیہ 80 سیکنڈ پر محیط ہے۔
منتخب ساز
قومی ترانہ بجانے کے لیے منتخب ساز درج ذیل ہیں
۔ولایتی طرز کی بانسری کلارنٹ اوبوا سیکسو فون کارنٹ ٹرمپٹ ہارن سلائیڈ ٹرومبون بیس ٹرومبون یوفونیم بے سون بیس اور ولایتی طرز کے ڈھول پکولو
قومی ترانے کی منظوری دینے والی کمیٹی
چیرمینجناب ایس ایم اکرام، ارکانسردار عبد الرب نشتر، پیر زادہ عبدالستار، پروفیسر چکراورتی، چودھری نذیر احمد خان، زیڈ اے بخاری، اے ڈی اظہر، کوی جسیم الدین، ابو الاثر حفیظ جالندھری

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔