Thursday, 20 August 2009

قرآن مجید کی توہین پر سزا

0 comments
ترجمہ و تلخیص : مظفر سلطان لونگی


آسٹرین عدالت نے 43 سالہ شخص پر اسلام کی توہین کے جرم میں 300 یورو کا جرمانہ عائد کیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اس شخص نے کسی ویپ سائٹ پر اسلام کے خلاف لکھا تھا کہ قرآن مجید جھوٹی کتاب ہے اور مسلمان عیسائیوں کے دشمن ہیں۔نیز سنہ 1912 میں اسلام پسندی کا فیصلہ ایک جلد بازی تھی لہاذا ضرورت اس بات کی ہے کہ اسلام کو تحقیق کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے۔ عدالت میں بھی ملزم نے قرآن مجید کی آیات سے اپنی بات ثابت کرنے کی کوشش کی۔

عدالت نے آسٹرین قانون کی دفعہ 188 کے تحت توہین مذھب کا جرم عائد کرتے ہوئے مجرم کو چھ ماہ کی جیل یا مالی تاوان کی سزا سنائی ہے۔

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔