Monday, 31 August 2009

اک ماں

0 comments
اک ماں

اپنے لال کی آس میں

جانے بیٹا کب گھر آئے

راتیں یونہی ڈھل جاتی ہیں

بوڑھی آنکھیں جل جاتی ہیں

بھید نہیں کھلتا ہے ‘آخر

بیٹے دیر سے کیوں آتے ہیں

مائیں جاگتی کیوں رہتی ہیں

ان کی آنکھیں کیوں بہتی ہیں؟

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔