Monday, 31 August 2009

لذات کی اقسام !!!!!!!!!!!!

0 comments

لذات کو تین اقسام میں تقسیم کیا جا سکتا ھے۔
حسی لذات
عقلی لذات
روحانی لذات

حسی لذات وہ لذتیں ھیں جنہیں ھم اپنے حواس کی مدد سے حاصل کرتے ھیں جیسے کھانے پینے کی لذت وغیرہ وغیرہ۔

عقلی لذات وہ لذتیں ھیں جنہیں ھم اپنی عقل کی وجہ سے محسوس کرتے ھیں۔ جیسے کوئی اچھی بات سمجھ آ جانا، کسی سوال کا جواب مل جانا۔ اس کے لیے حواس کی ضرورت نہیں ھوتی۔ ھو سکتا ھے حواس نے اس میں ضمنی کردار ادا کیا ھو مگر اصل لذت اندر سے آئی باھر سے نہیں۔

روحانی لذات وہ لذتیں ھیں جنہیں ھم اپنی روح کی وجہ سے محسوس کرتے ھیں۔ اس کے لیے عقل وسیلہ ھو سکتی ھے مگر اس کا مرکز کچھ اور ھے جیسے آپ کسی ڈوبتے ھوئے انسان کو بچائیں تو آپ کو اس وقت روحانی لذت کا احساس ھو گا۔

اب اسی درجہ بندی کے مطابق ان کی طاقت بھی ھے۔ مثلا کہتے ھیں کہ حسی لذات دراصل لذت ھے ھی نہیں بلکہ رفع تکلیف ھے یعنی ھمیں ایک تکلیف پہنچتی ھے جب وہ دور ھو جاتی ھے تو ھمیں راحت کا احساس ھوتا ھے وھی اس کی لذت ھے۔ چنانچہ آپ کو بھوک لگی آپ نے روٹی کھا لی اب دوبارہ آپ کو روٹی دی جائے تو آپ کو اس میں کوئی لذت محسوس نہیں ھو گی۔

یا پھر اگر حسی لذت ، لذت ھے بھی تو اس کادرجہ کم ھے اور زیادہ اعلی لذتیں عقلی اور پھر روحانی ھیں۔

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔