Tuesday, 1 September 2009

آیا ماہ رمضان

0 comments
یہ ہے اللہ کا احسان
آیا ماہ رمضان
اہل ایمان کا مہمان
آیا ماہ رمضان




کھل گئے جنت کے دروازے اور دوزخ کے بند
جنت میں جائیں گے جو ہیں روزے کے پابند
یہ ہے بخشش کا سامان
آیا ماہ رمضان




اپنا یہ مہمان معظم آتا ہے ہر سال
کرتے ہیں اہل ایمان اس کا دلی استقبال
اس کی بڑی ہے شان
آیا ماہ رمضان




ماہ مبارک کا پہلا عشرہ رحمت سے بھرپور
دوسرے میں ہوتا ہے ہر دم عفو و کرم کا ظہور
آخری عشرے میں جنت کی پہچان
آیا ماہ رمضان


کئی درجے بڑھ جاتا ہے فرض کا اس میں ثواب
نفلوں کا فرض کے برابر اجر ہے عالی جناب
خوب جلا پائے ایمان
آیا ماہ رمضان



روزے میرے لیے ہیں تو ہوں خوش اس جزا
روزے دار کو اس کا بدلا میں خود کرونگا عطا
یہ ہے اللہ کا فرمان
آیا ماہ رمضان




روزے دار کے منہ کی بو رب کو بڑی محبوب
یہ طالب ہے رب کا اور خود ہے رب کا مطلوب
اس سے ہے راضی سبحان
آیا ماہ رمضان




جس دروازے سے جائیں گے خلد میں روزے دار
ہر اک قدم پہ آئے گی ان کو خوشبو کی مہکار
دل کے نکلیں گے ارمان
آیا ماہ رمضان



روزہ داروں پر خالق کا ہے یہ بڑا انعام
جنت میں ان کے دروازے کا ہے حدیث میں یہ نام
جو کہلائے باب الریان
آیا ماہ رمضان




ہر اک سمت سے آئیں نمازی جب ہو وقت نماز
ہے یہ حقیقت ماہ رمضان کا ہے یہ اعجاز
ہوگئے بے بس شیطان
آیا ماہ رمضان





بھری بھری ہے ہر اک مسجد ہر لمحے انمول
بندے ہیں مصروف عبادت کرو کھل کے غور
اس سے راضی ہے رحمان
آیا ماہ رمضان



نفل ادا کرتا ہے کوئی ، کوئی فرض ادا
پڑھ رہا ہے درود نبیۖ پر کوئی کوئی کلام خدا
ریل پے رکھا ہے قرآن
آیا ماہ رمضان



روح کی ہیں جتنی بیماریاں ، روزہ ہے ان کا علاج
نفس کے سر پہ رکھ دیتا ہے یہ تقوے کی تار
ہے یہ روحانی ارمان
آیا ماہ رمضان





گھر گھر رونق ہے اس کی ظاہر دن ہو یا رات
ہوئی ہے اس کی دیکھو ہر جانب برکات
خیر کا ہے یہ تو عنوان
آیا ماہ رمضان




افطاری اور سحری کے بیچ ہے دن کا منظر
چہل پہل ہے ہر طرف ، مسجد ہو یا گھر
رحمتوں کی بارش ہے ہر آن
آیا ماہ رمضان




جگہ جگہ ہوت ہیں شبینے ، مچتی ہے ہر سو دھوم
اور شبینوں میں لوگوں کا ہوتا ہے خوب ہجوم
یہ ہے مہینوں کا سلطان
آیا ماہ رمضان



ماہ میں اس کے تیس ہیں روزے اور شوال کے چھ
جس نے رکھے اس کو رب جزا سال کے روزوں کی دے
یہ ہے محمدۖ کا اعلان
آیا ماہ رمضان

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔