Wednesday, 2 September 2009

ایک عیسوی سال میں تین ہجری سال جمع

0 comments


اسی سال 2008 دسمبر میں 1430 ہجری سال کی ابتدا ہوگی۔

یہ اس وجہ سے کہ قمری سال کا دورانیہ تقریبا 354 دن کا ہے جبکہ عیسوی سال 365 دنوں بر مشتمل ہے۔ ان دونوں کے درمیان 11 دن کا فرق آتا ہے۔ اسی فرق کی وجہ سے سن 2008 میں یہ کونی عجوبہ ظاہر ہوگا۔ جو کہ ہر 32 شمسی سالوں جوکہ 33 قمری سال بنتے ہیں کے بعد ظاہر ہوتا ہے۔ اس حساب سے ہر 100 سال میں تین دفعہ واقع ہوتا ہے۔

قرآن میں اس بات کا اشارہ سورہء کہف میں اصحاب کہف کے واقعہ آیت نمبر 25 اور 26 میں ملتا ہے:

اللہ تعالی اصحاب کہف کی خبر دیتے ہوئے فرماتے ہیں:
«ولبثوا في كھفھم ثلاث مائۃ سنين وازدادوا تسعاً
قل اللہ اعلم بما لبثوا لہ غيب السموات والارض»
ترجمہ:
اصحاب کہف اپنی غار میں تین سو سال اور مزید 9 سال ٹھہرے رہے۔ کہہ دو اللہ ہی جانتا ہے کہ کتنی مدت رہے۔ اسی کے پاس آسمانوں اور زمین کے امور غیبیہ کا علم ہے۔

اس کا مطلب یہ ہوا کہ اصحاب کہف غار میں 300 شمسی سال رہے جو کہ قمری سال کے حساب سے 309 قمری سال بنتے ہیں۔

سبحان تیری قدرت


اگلا سال سن 2008 میں تین ہجری سال اکٹھے ہوں گے۔ 1428 1429 اور 1430 ہجری۔ 1428 ہجری کے آخری دن سن 2008 کے ابتدا میں ہوں گے۔ اگلا ہجری سال 1429 جنوری 2008 میں شروع اور ختم ہوگا۔

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔